Sunday, July 22, 2007

جگہ جی لگانے کی یہ دنیا نہیں ہے

انوکھی وضع، سارے زمانے سے نرالے ہیں
یہ عاشق کونسی بستی کے یا رب، رہنے والے ہیں
جگہ جی لگانے کی دنیا نہیں ہے
یہ عبرت کی جا ہے تماشہ نہیں ہے

Strange is the looks (style), (they are) apart from the whole world
These lovers, O Lord, to which town do they belong….
World is not a place of heartly affiliations
This is a place of heed, it is not a jest….

جہاں میں ہیں عبرت کے ہر سُو نمونے
مگر تجھ کو اندھا کیا رنگ و بُو نے
کبھی غور سے بھی دیکھا ہے تو نے
جو معمور تھے وہ محل اب ہیں سُونے

Many examples are there of taking heed in the world
But the sight and sound has made you blind..
Have you ever pondered on this aspect?
The castles which were once liven in are now deserted

ملے خاک میں اہلِ شاں کیسے کیسے
مکیں ہو گٔیٔے لا مکاں کیسے کیسے
ھؤے ناموَر بے نشاں کیسے کیسے
زمیں کھا گٔیٔ نوجواں کیسے کیسے

Many people of status have now mixed with earth
Many with homes are now homeless
Many people of big name have become nameless
Many types of people have been engulfed by earth

اجل نے نہ کسریٰ ہی چھوڑا نہ دارا
اسی پہ سکندر فاتح بھی ہارا
ہر اک چھوڑ کے کیا حسرت سدھارا
پڑا رہ گیا سب یہیں کھاٹ سارا

Time did not leave Kisraa to be!
To this same "time" Alexander got defeated
Every one left behind their wishes and left
All that will be left here (in this world)

تجھے پہلے بچپن میں برسوں کھلایا
جوانی میں پھر تجھ کو مجنوں بنایا
بڑھاپے نے پھر آ کے کیا کیا ستایا
اجل تیرا کر دے گی بالکل صفایا

First it made you play in the childhood
In the youth it made you a lover
Old age then troubled you so much
"Time" will clear you completely

یہی تجھ کو دھُن ہے رہُوں سب سے بالا
ہو زینت نرالی ہو فیشن نرالا
جیا کرتا ہے کیا یونہی مرنے والا؟
تجھے حسنِ ظاہر نے دھوکے میں ڈالا

You are over concerned that you stay above all
That you have definitive beauty and a definitive fashion
Is this the way anyone lives who (knows) he will die?
You got deceived with the apparent beauty

وُہ ہے عیش و عشرت کا کؤی محل بھی؟
جہاں ساتھ میں کھڑی ہو اجل بھی
بس اب اس جہالت سے تُو نکل بھی
یہ طرزِ معیشت اب اپنا بدل بھی

Is that castle of lofty life even a castle
When there is "Time" standing next to it
Enough now! Come out of this ignorance
And change this way of earning of yours

یہ دنیأے فانی ہے محبوب تجھ کو
ہؤی واہ کیا چیز مرغوب تجھ کو
نہیں عقل اتنی بھی مجزوب تجھ کو
سمجھ لینا چاہیے اب خوب تجھ کو

This finite world is beloved to you
Its amazing what (thing) has become your (means of) pleasure
Do you, O drowned one (in its endeavors) not have intelligence?
You should have understood it by now!

بڑھاپے میں پا کے پیامِ قضا بھی
نہ چونکا نہ چیتا نہ سنبھلا ذرا بھی
کؤی تیری غفلت کی ہے انتہا بھی؟
جنون چھوڑ کر اپنے ہوش آ بھی

In the old age, even after realizing your destiny
You didn't jolted, neither corrected your ways
Is there a limit to your ignorance..?
Leave this obsession and become aware!

جب اِس بزم سے دوست چل دیے اکثر
اور اُٹھے چلے جا رہے ہیں برابر
ہر وقت پیشِ نظر ہے یہ منظر
یہاں پر تِرا دل بہلتا ہے کیونکر

When all the friends have departed from this world
And continuously they are leaving still,
The view is in front of you as always..
Then (knowing all that) why does your heart is satisfied with it?

جہاں میں کہیں شورِ ماتم بپا ہے
کہیں فِکر و فاقہ سے آہ و بکا ہے
کہیں شکوہ جور و مکر و دغا ہے
ہر ہر طرف سے بس یہی صدا ہے

جگہ جی لگانے کی دنیا نہیں ہے
یہ عبرت کی جا ہے تماشہ نہیں ہے

There are screams and cries all around the world
Some cry out of destituteness and some of hunger
Some complain of deceipt and fraud
From all corners, thus is all the calling…

World is not a place of heartly affiliations
This is a place of heed, it is not a jest….

شاعر: ۔
خواجہ عزیز الحسن مجزوب رحمتہ اللہ

English Translation:
ابو ہاجرۃ بن عبدالحمید

2 comments:

Abu Shamil said...

برادر ابو حمیلہ! افتخار اجمل صاحب کے بلاگ سے آپ کے بلاگ تک پہلی بار رسائی حاصل ہوئی اور انتہائی معذرت اور افسوس کہ ساتھ کہ اوپر کی پہلی پوسٹ کی پہلی سطر کا دوسرا ہی لفظ غلط نظر آ گیا، اصل مصرعہ یہ ہے:

انوکھی وضع ہے، سارے زمانے سے نرالے ہیں

امید ہے آپ اس شاندار نظم میں اس غلطی کو درست کر دیں گے۔
السلام وعلیکم و رحمت اللہ

ابو حليمة said...

اسلام علیکم ابو شامل صاحب،۔
جزاک اللہ خیراً
غلطی درست کر لی گٔی ہے۔
میرے بلاگ پر خوش آمدید۔