Tuesday, April 3, 2007

اے اللہ!۔


آشنا اپنی حقیقت سے ہو اے دہکاں ذرا
دانہ تو، کھیتی بھی تو، باراں بھی تو، حاصل بھی تو
آہ کس کی جسجتجو آوارہ رکھتی ہے تجھے
راہ تو، راہ رو بھی تو، رہبر بھی تو، منزل بھی تو

اے اللہ اے اللہ
اے اللہ اے اللہ
تو ہی عطا تو جود و سخا
ہم ہیں تِرے منگتے
خالی دامن بھر دے
آج کچھ ایسا کر دے

اے اللہ اے اللہ
دین ترا ہم پہ احساں
تکمیلِ انسانی
دنیا کی سلطانی

اے اللہ
تو ہی عطا تو جود و سخا
خالی دامن بھر دے
آج کچھ ایسا کر دے

یا مکہ ، یا مکہ، یا حرماً اشجانا
نِلتِ اعِزاً و طبتِ مکانا
و طبتِ مکانا

یا مکہ ، یا مکہ، یا حرماً اشجانا
نِلتِ اعِزاً و طبتِ مکانا
و طبتِ مکانا

الشوقُ لِمکّۃَ نادانا
وھواھا قَد بَثَّ الاشجانا
فَالنَّفسُ تَحِنُّ لَّرویاھا
وَالقلبُ یُلبَّی ھیمانا
وَالقلبُ ھیمانا

اے اللہ اے اللہ
تو ہی عطا تو جود و سخا
ہم ہیں تِرے منگتے
خالی دامن بھر دے
آج کچھ ایسا کر دے

اے اللہ ہے یہ دعا
دل میں میرے گھر کر لے
تیرے سوا کؤی نہ ہو
مجھ پہ ایسا کرم کر دے

میں ہوں خطا
خطا ہی خطا
پر تو ہے عطا
خالی دامن بھر دے
آج کچھ ایسا کر دے


یا مکہ ، یا مکہ، یا حرماً اشجانا
نِلتِ اعِزاً و طبتِ مکانا
و طبتِ مکانا

یا مَکّۃُ رَبِّ علاَّکِ
وَلِحجِّ قُلوبٍ سَواکِ
والمؤمِنُ یَسمُوا بِغَلاکِ
وَیظلُّ لِزَمزَمَ ظَمآنا
لِزَمزَمَ ظَمآنا

یا مکہ ، یا مکہ، یا حرماً اشجانا
نِلتِ اعِزاً و طبتِ مکانا
و طبتِ مکانا


1 comment:

علمدار said...

جزاک اللہ
مجھے کافی دنوں سے اس کی تلاش تھی۔ بے حد شکریہ