Wednesday, February 7, 2007

دیانت داری

ابھی کچھ دنوں کی بات ہے ایک خبر نظر سے گزری کہ ہیلی فیکس میں ایک نوجوان علی الصبح بینک مشین سے پیسے نکالنے گیا تو اس کی نظر کچھ تھیلیوں پر پڑی جو مشیں کے برابر میں پڑی تھیں۔ جب اس نے غور سے دیکھا تو معلوم ہوا کہ یہ تھیلیاں پیسوں سے بھری ہؤی ہیں۔ پہلا خیال تو اس کے دل میں وہی آیا جو کسی کے بھی دل میں شیطان ڈالتا ہے کہ اس میں سے کچھ پیسے اڑا لے جاؤں ۔ پھر اس کے دل نے آواز دی کہ یہ پیسے تمہارے نہیں ہیں انھیں بینک والوں کو واپس کر دو۔

ہوتا دراصل یہ ہے کہ یہاں کینیڈا میں رات کے وقت بینک کی سیکیورٹی والے آ کر بینک کی مشینوں میں پیسے بھر جاتے ہیں تاکہ اگلے دن لوگ ان مشینوں کو استعمال کر سکیں۔ نہ جانے کس طرح سیکیورٹی والے دو تھیلیاں بھول گٔیے اور صبح اس نوجوان کی نظر پڑ گیٔی۔ دیانت داری کا ثبوت دیتے ہؤے اس نوجوان نے سارے پیسے بینک کو واپس کر دیے جس پر اسے بینک والوں نے پانچ سو ڈالر کا انعام بھی دیا۔

سنا ہے کسی زمانے میں مسلم معاشرے میں بھی اسی قسم کی مثال مل جایا کرتی تھی، پر اب تو ایسے لوگ ہمارے معاشرے میں خال خال ہی ہیں۔